جنریشن گیپ ایم ابراہیم خان

intelligent086

Super Star
Nov 10, 2010
10,493
10,879
1,313
Lahore,Pakistan
جنریشن گیپ

ایم ابراہیم خان

دو نسلوں کے درمیان فرق ہر معاشرے کا بنیادی مسئلہ ہے۔ اور معاملہ دو نسلوں کے فرق کا نہیں‘ بلکہ نئی اور پرانی نسل کی سوچ کے درمیان پائے جانے والے فرق کا ہے۔ کسی بھی معاشرے کے استحکام کے لیے لازم ہے کہ نئی اور پرانی نسل کے درمیان تعلق متوازن ہو‘ ڈھلتی ہوئی نسل ابھرتی ہوئی نسل کو کچھ نہ کچھ سکھانے پر مائل ہو اور ابھرتی ہوئی نسل بھی کچھ حاصل کرنے پر آمادہ ہو۔ نئی نسل پرجوش اور جذباتی ہوتی ہے۔ اس کے لیے سب کچھ نیا نیا ہوتا ہے‘ اس لیے وہ بہت سے معاملات میں اس قدر دلچسپی لیتی ہے کہ اُن میں گم ہوکر رہ جاتی ہے۔ جن کی رگوں میں گرم خون رواں ہو وہ بیشتر معاملات میں جذباتیت اور عجلت پسندی کا شکار ہوتے ہیں اور اچھے برے میں تمیز کا شعور کم ہی رکھتے ہیں۔
پرانی یا ڈھلتی ہوئی عمر کی نسل بہت سے معاملات میں غیر معمولی حد تک تجربہ کار ہوتی ہے اور اچھی طرح جانتی ہے کہ کس وقت کیا کرنا چاہیے۔ یہ نسل دنیا کو سمجھنے کی صلاحیت ہی نہیں رکھتی‘ برتنے کا ہنر بھی جانتی ہے۔ اُس سے بہت کچھ سیکھا جاسکتا ہے اور سیکھا جانا چاہیے مگر ایک بنیادی مسئلہ یہ ہے کہ نئی نسل عجلت پسند ہوتی ہے اور خاطر خواہ حد تک سنجیدہ نہیں ہو پاتی۔ یہ بات پرانی نسل کے لیے خاصی ناقابلِ برداشت ہوتی ہے۔ پرانی نسل چاہتی ہے کہ نئی نسل کچھ سیکھنے کے حوالے سے ذہن بنائے‘ سنجیدہ ہو۔ جب دونوں نسلیں اس حوالے سے ایک پیج پر آنے میں ناکام رہتی ہیں تب بگاڑ پیدا ہوتا ہے۔ معاملہ یہ ہے کہ نئی نسل نے بہت کچھ دیکھا اور جھیلا ہوتا ہے۔ زمانے کے سرد و گرم کا سامنا کرنے کے بعد جب وہ کسی مقام تک پہنچتی ہے تب چاہتی ہے کہ اُس کی حیثیت تسلیم کی جائے اور اُس سے کچھ پانے کے لیے ویسی ہی سنجیدگی دکھائی جائے جیسی اُس میں پائی جاتی ہے۔ وقت کے ہاتھوں جو کچھ سہنا پڑتا ہے اُس سے نبرد آزما ہونے کے بعد پرانی نسل چاہتی ہے کہ نئی نسل کو اگر کچھ سیکھنا ہے تو مطلوب نوعیت کی لگن کا مظاہرہ کرے‘ چند ایک معاملات میں ایثار کا مظاہرہ کرنے کے لیے بھی تیار ہو۔
دو نسلوں کا فرق دور کرنے کے لیے جس نوعیت کی سوچ درکار ہوتی ہے وہ کسی بھی معاشرے میں خاطر خواہ حد تک نہیں پائی جاتی۔ دونوں نسلوں کی طرزِ فکر کسی بھی اعتبار سے یکساں ہو ہی نہیں سکتی۔ نئی نسل چاہتی ہے کہ پرانی نسل کے لوگ اُس کی طرح تیزی اور شوخی اپنائیں‘ بیشتر معاملات میں بھرپور توانائی اور زندہ دلی کا مظاہرہ کریں۔ دوسری طرف پرانی نسل اس بات پر بضد رہتی ہے کہ نئی نسل زندگی ڈھنگ سے بسر کرنے کا ہنر سیکھنے میں فکر کی غیر معمولی پختگی کا مظاہرہ کرے۔ اب سوال یہ ہے کہ دو نسلوں کے درمیان پائے جانے والے سوچ کے فرق کو کم کیسے کیا جائے؟ یہ فرق ختم کرنا تو خیر ممکن ہی نہیں‘ اب کم کرنا بھی بہت دشوار ہوگیا ہے۔ اس کے بہت سے اسباب ہیں۔ ہر دور میں دو نسلوں کے درمیان خلیج کو وسیع اور مزید گہرا کرنے میں متعدد عوامل کلیدی کردار ادا کرتے ہیں۔ سوچ کا فرق محض نسل کے فرق سے پیدا نہیں ہوتا۔ یہ فرق پیدا کرنے میں علوم و فنون کی ترقی‘ عملی زندگی کے حوالے سے پائے جانے والے متعدد میلانات اور بہت سے معاشرتی رجحانات بھی اپنا کردار ادا کرتے ہیں۔ پرانی نسل بہت سے معاملات میں جامد سوچ کی حامل ہوتی جاتی ہے۔ وہ بیشتر امور میں اپنی بات منوانے پر یقین رکھتی ہے۔ اُس کی ضد ہوتی ہے کہ اُس کی رائے درست تسلیم کرلی جائے۔ پرانی نسل سے تعلق رکھنے والے بیشتر افراد اپنے تجربے اور مشاہدے کی بنیاد پر غیر معمولی درجہ یا حیثیت چاہتے ہیں۔ سب سے بڑا مسئلہ ضد اور ہٹ دھرمی پر مبنی سوچ کا ہے۔ پرانی نسل سے تعلق رکھنے والے بیشتر افراد چاہتے ہیں کہ جب وہ کوئی بات کہیں تو بلا چُوں چَرا بالکل درست تسلیم کرلی جائے‘ اُن کے تجربے کو کسی بھی سطح پر اور کسی بھی حوالے سے چیلنج نہ کیا جائے۔ نئی نسل کے مزاج میں لاپروائی بنیادی عنصر کا درجہ رکھتی ہے۔ ابھرتی ہوئی عمر میں شعور کی پختگی ممکن نہیں۔ قویٰ چونکہ توانا ہوتے ہیں اس لیے بیشتر معاملات میں بھرپور جوش و خروش کا مظاہرہ نہ صرف یہ کہ ممکن ہوتا ہے بلکہ باعثِ افتخار بھی سمجھا جاتا ہے۔ نئی نسل چاہتی ہے کہ جو کچھ بھی کرے بھرپور جوش و خروش کے ساتھ کرے اور اس حوالے سے اس پر کوئی پابندی عائد نہ کی جائے۔ یہ نسل اپنے بیشتر معاملات میں لگی بندھی سوچ کو اپناتی ہے نہ ہی نظم و ضبط کو خاطر میں لاتی ہے۔ یہ عمومی طرزِ فکر و عمل جوانی کے پورے دور پر محیط ہوتی ہے۔
کامیاب وہی معاشرے رہتے ہیں جو دو نسلوں کی طرزِ فکر و عمل میں پائے جانے والے فرق کو سمجھنے اور اُس کے مطابق معقول حکمتِ عملی مرتب کرنے میں کامیاب ہوتے ہیں۔ ریاستی ادارے اگر منظم اور مضبوط ہوں تو نئی اور پرانی نسل کے فرق میں پائے جانے والے منفی پہلوؤں کو کنٹرول کرنے میں کامیاب رہتے ہیں۔ نئی نسل کو جس نوعیت کی آزادی درکار ہوتی ہے وہ اُسے دی جاتی ہے مگر چند حدود میں رہتے ہوئے۔ پرانی نسل اپنی ذمہ داری کو بہتر سمجھتی ہے اور اس حوالے سے جو کچھ بھی کرنا چاہیے وہ بہ رضا و رغبت اور بحسن و خوبی کرتی ہے۔
آج کا پاکستانی معاشرہ جنریشن گیپ کے حوالے سے غیر معمولی مشکلات کا شکار ہے۔ سب سے بڑا یا بنیادی مسئلہ یہ ہے کہ ہمارے ہاں دونوں ہی نسلوں کو اپنے وجود‘ دائرۂ کار اور ذمہ داریوں کا بھرپور احساس نہیں۔ پرانی نسل غیر معمولی تجربہ رکھتی ہے‘ اس کا مشاہدہ بھی خوب ہے مگر وہ نئی نسل کو کچھ سکھانے میں خاطر خواہ دلچسپی لیتی ہے نہ معاشرے کو مضبوط بنانے کے حوالے سے اپنے کردار کی اہمیت ہی محسوس کرتی ہے۔ ایک بڑا مسئلہ یہ بھی ہے کہ ہماری پرانی نسل انفرادی اور اجتماعی سطح پر اُس برد باری کی حامل نہیں جس کی اُس سے توقع رکھی جاتی ہے۔ دنیا بھر میں پرانی نسل اپنی ذمہ داریوں کو شدت سے محسوس کرتی ہے اور اُسی کے مطابق موزوں طرزِ فکر و عمل بھی اپناتی ہے۔ ہمارے ہاں مجموعی طور پر ایسا نہیں ہے۔ بڑی عمر کے فرد کو اپنے اہلِ خانہ‘ خاندان‘ اہلِ علاقہ اور اس سے آگے بڑھ کر پورے معاشرے کے لیے جو کچھ کرنا چاہیے وہ اس میں خاطر خواہ دلچسپی نہیں لے رہا۔ معاملات کو نمٹانے کے حوالے سے اسے جس قدر ثابت قدمی دکھانی چاہیے وہ بھی نہیں دکھائی جارہی۔ نئی نسل کا معاملہ یہ ہے کہ وہ دنیا بھر کی لایعنی باتوں میں الجھ کر‘ غرق ہوکر رہ گئی ہے۔ ٹیلی کام سیکٹر میں ٹیکنالوجی کی پیش رفت نے ہماری نئی نسل کو مست و غافل کر رکھا ہے۔ سارا کا سارا وقت بے مصرف ویڈیوز دیکھنے اور غیر ضروری طویل کالز کرنے میں ضائع ہو رہا ہے۔ ایسے میں اُس کے سنجیدہ ہونے کا تو سوچا بھی نہیں جاسکتا۔
نئی اور پرانی نسل کے فرق کو قابلِ قبول بنانے کے حوالے سے جن اقوام کو بہت زیادہ محنت کرنی ہے اُن میں پاکستان بھی نمایاں ہے۔ ہمارے ہاں نئی نسل کو مستقبل کے حوالے سے سنجیدہ ہونا ہے اور پرانی نسل کو بہت سے معاملات میں حقیقی برد باری اپنانی ہے تاکہ معاملات کی درستی یقینی بنائی جاسکے۔ اس مقصد کا حصول غیر معمولی توجہ اور بھرپور محنت کا طالب ہے۔ نئی نسل کو سیکھنے پر مائل ہونا ہے اور پرانی نسل کو جھنجھلاہٹ کا مظاہرہ کیے بغیر سکھانے پر آمادہ ہونا ہے۔
 

maria_1

Super Star
Jul 7, 2019
5,290
5,621
213
یہ گیپ بڑھنے سے روکنا بہت مشکل ہے تجاویز تو بہت سی زیر غور ہیں
 

Asheer

ஜÇatch-me'ıf U-caŋஜ
Super Star
Feb 10, 2013
12,987
6,217
1,113
Karachi
میرا نہیں خیال کہ یہ خلیج دور ہوگی۔۔۔ یہ لڑائی تو تا قیامت رہے گی
 
  • Like
Reactions: intelligent086

Angela

~LONELINESS FOREVER~
TM Star
Apr 29, 2019
3,765
4,153
213
~Dasht e Tanhaayi~
میرا نہیں خیال کہ یہ خلیج دور ہوگی۔۔۔ یہ لڑائی تو تا قیامت رہے گی
Allaaaaaaah khair ..........tussi tey takhreeb kaarana zehn rakh dey o..;))
Theek hai yeh gap paya jata hai..moujoda generation khud ko hi sb kuch smjhney waali beemari main mubtlaa hai..time waste krna bhi un ka shewaa hai...aur bhi bht kuch..aur yeh bhi theek hai k puraani generation tujarbaa kaar hoti hai aur un sey bht kuch seekha jaa skta hai..lekin zaroori hai k yehsb haalat e haazira k mutaabiq ho...q Hazrat Ali ka qol hai k naye dor k logon ko apney dor ki batain apnaaney pr majboor na kro..q k wo tmhaarey doe k liye nai bul k aik new era main peida huey hain aur us k kuch naye taqaazey hain..\
lekin masla yeh hai k hum sb main bardaasht ka maada nahi paaya jata..new generation ko apney barron ki sahi bt bhi ghalat lgti hai aur bazurg hazraat nayi nasl sey be-zaar nazr aatey hain... agr dono generations apni soch o nazriyat drust way main , tahammul k sath convey krney ki slaahiyat rakhtey hon tou yeh gap kaafi hadd tk km ho skta hai..
Asheer bro post phir lambi ho gi:s aur bt abhi mukammal nai hui :s
 

Asheer

ஜÇatch-me'ıf U-caŋஜ
Super Star
Feb 10, 2013
12,987
6,217
1,113
Karachi
Allaaaaaaah khair ..........tussi tey takhreeb kaarana zehn rakh dey o..;))
Theek hai yeh gap paya jata hai..moujoda generation khud ko hi sb kuch smjhney waali beemari main mubtlaa hai..time waste krna bhi un ka shewaa hai...aur bhi bht kuch..aur yeh bhi theek hai k puraani generation tujarbaa kaar hoti hai aur un sey bht kuch seekha jaa skta hai..lekin zaroori hai k yehsb haalat e haazira k mutaabiq ho...q Hazrat Ali ka qol hai k naye dor k logon ko apney dor ki batain apnaaney pr majboor na kro..q k wo tmhaarey doe k liye nai bul k aik new era main peida huey hain aur us k kuch naye taqaazey hain..\
lekin masla yeh hai k hum sb main bardaasht ka maada nahi paaya jata..new generation ko apney barron ki sahi bt bhi ghalat lgti hai aur bazurg hazraat nayi nasl sey be-zaar nazr aatey hain... agr dono generations apni soch o nazriyat drust way main , tahammul k sath convey krney ki slaahiyat rakhtey hon tou yeh gap kaafi hadd tk km ho skta hai..
Asheer bro post phir lambi ho gi:s aur bt abhi mukammal nai hui :s
آپ میرا پوائنٹ نہیں سمجھیں {(doh)} ہاہاہا تخریب کاری نہیں کر رہا حقائق پہ بات کر رہا ہوں۔۔ کچھ سنجیدہ لوگوں کو چھوڑ کے نئی نسل چاہتی ہے اب صرف ہماری مانی جائے۔ تم نے بھی تو اپنا دور اپنی مرضی سے گزارا ہے {(laugh)}
اصل میں بڑی وجہ دور جدید و قدیم کا فرق ہے۔ نئی نسل ظاہر ہے پرانے دور کے حساب سے چلنے پہ رضامند نہیں ہوتی اور پرانی نسل کو جدید دور کی چیزوں سے اکثر اختلاف رہا ہے ۔ مثال کے طور پہ اسمارٹ فونز آج کل ہمارے لئے زمانے کے لحاظ سے اشد ضرورت بن گئے ہیں مگر ان لوگوں کے نزدیک یہ صرف ایک وقت کا ضیاع ہے۔ موبائل فون کی وجہ سے تو روٹین میں باتیں سننے کو ملتی ہیں :joy
 

Angela

~LONELINESS FOREVER~
TM Star
Apr 29, 2019
3,765
4,153
213
~Dasht e Tanhaayi~
آپ میرا پوائنٹ نہیں سمجھیں {(doh)} ہاہاہا تخریب کاری نہیں کر رہا حقائق پہ بات کر رہا ہوں۔۔
malooom hai hmain. ..aik tou hr bt pe aap peshaani peetney lgtey hain :joy
کچھ سنجیدہ لوگوں کو چھوڑ کے نئی نسل چاہتی ہے اب صرف ہماری مانی جائے۔ تم نے بھی تو اپنا دور اپنی مرضی سے گزارا ہے
tou aur kiyaaaaa.. X_X wo bhi kiyaaaa dor tha...sukoon hi sukoon, fursat hi fursat :D
ab tou yeh haalat hai:
naa murrawat , na muhabbat , na khuloos hai Muhsin
main tou sharminda hn is dor ka insaan ho kr :(
اصل میں بڑی وجہ دور جدید و قدیم کا فرق ہے۔ نئی نسل ظاہر ہے پرانے دور کے حساب سے چلنے پہ رضامند نہیں ہوتی اور پرانی نسل کو جدید دور کی چیزوں سے اکثر اختلاف رہا ہے ۔ مثال کے طور پہ اسمارٹ فونز آج کل ہمارے لئے زمانے کے لحاظ سے اشد ضرورت بن گئے ہیں مگر ان لوگوں کے نزدیک یہ صرف ایک وقت کا ضیاع ہے۔ موبائل فون کی وجہ سے تو روٹین میں باتیں سننے کو ملتی ہیں
hum ney bhi yahi kaha thaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaa{(book)}agrexplain krney lgtey tou phir shikayat honi thi k post lambi ho giX_X BTW lubb e lubaab hmari bt ka bhi yahi tha:joy
 

Asheer

ஜÇatch-me'ıf U-caŋஜ
Super Star
Feb 10, 2013
12,987
6,217
1,113
Karachi
malooom hai hmain. ..aik tou hr bt pe aap peshaani peetney lgtey hain :joy

tou aur kiyaaaaa.. X_X wo bhi kiyaaaa dor tha...sukoon hi sukoon, fursat hi fursat :D
ab tou yeh haalat hai:
naa murrawat , na muhabbat , na khuloos hai Muhsin
main tou sharminda hn is dor ka insaan ho kr :(


hum ney bhi yahi kaha thaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaaa{(book)}agrexplain krney lgtey tou phir shikayat honi thi k post lambi ho giX_X BTW lubb e lubaab hmari bt ka bhi yahi tha:joy
نہ میں نے تھریڈ اسٹارٹر سے اختلاف کیا نہ آپ سے :s
میں نے صرف اتنا عرض کیا کہ دونوں کے درمیان جو خلا ہے وہ پر ہونا اگر ناممکن نہیں تو مشکل ضرور ہے۔

wo bhi kiyaaaa dor tha...sukoon hi sukoon, fursat hi fursat
بالکل یہ تو ابھی چند سال قبل ہی کی بات ہے۔ زیادہ دور جانے کی بھی ضرورت نہیں
 
  • Like
Reactions: maria_1 and Angela

Angela

~LONELINESS FOREVER~
TM Star
Apr 29, 2019
3,765
4,153
213
~Dasht e Tanhaayi~
نہ میں نے تھریڈ اسٹارٹر سے اختلاف کیا نہ آپ سے :s
میں نے صرف اتنا عرض کیا کہ دونوں کے درمیان جو خلا ہے وہ پر ہونا اگر ناممکن نہیں تو مشکل ضرور ہے۔
بالکل یہ تو ابھی چند سال قبل ہی کی بات ہے۔ زیادہ دور جانے کی بھی ضرورت نہیں
okaayyyyy okayyyyyyyyyyyyy :joy
pr am tou chand saal pooraney nai hain :joy sadiyaaaaaaaaaaaan beet gayi :joy
 
  • Like
Reactions: Asheer

Asheer

ஜÇatch-me'ıf U-caŋஜ
Super Star
Feb 10, 2013
12,987
6,217
1,113
Karachi
Haaaaaaaaaaaaaan naaaaaaaaaaa :joy
ab smjh nai aaraha krain tou krain kiyaaaaaaaaaaaaaaaa :joy
Wo kbi bachpan me indian dramas me suna tha k bhatakti aatma ko mukti mil gyi :joy not sure what mukti actually is :s ye try kr k dekh len :D
 
  • Like
Reactions: Angela
Top
Forgot your password?