خلا میں پہلی واردات

intelligent086

Super Star
Nov 10, 2010
5,671
5,716
1,313
Lahore,Pakistan
خلا میں پہلی واردات
115592

دنیا میں رہنے والے خلا کے بارے میں کم ہی جانتے ہیں کہ وہاں بھی جرائم کی نئی دنیا آباد ہو رہی ہے۔ ایک ماہر اور بہترین خاتون خلا باز کے خلاف ناسا نے خلا میں رہ کر اپنے سابق شوہر کے اکائونٹس چیک کرنے کے جرم میں کارروائی کا آغازکر دیا ہے۔ خاتون خلا باز پر الزام ہے کہ اس نے خلائی مشن کے دوران ناسا کی ٹیکنالوجی استعمال کرتے ہوئے اپنے سابق شوہر کے اکائونٹس کی پڑتال کی۔ غالباً اس کا خیال تھا کہ خلا میں رہ کر اس پر کوئی قانون نافذ نہیں ہو سکتا مگر ناسا اور دوسرے قانونی ماہرین نے کہہ دیا ہے کہ خلا میںجرم کرنے پر بھی وہی قانون نافذ ہوں گے جو زمین پر ہوتے ہیں۔ لہٰذا قانون سے لاعلمی اب معافی کا سبب بن ہی نہیں سکتی۔ امریکی خلا باز اینی مکلین کا شمار دنیا کے مایہ ناز خلا بازوں میں ہوتا ہے، وہ ناسا کی بہترین خلا بازوں میں شمار ہوتی ہے۔ اسی لئے اسے خلا میںچھ ماہ کے مشن پر بھیجا گیا تھا ۔اس مشن میں خلا میں چہل قدمی کرنا بھی شامل تھا۔ مگر اس کے سابق شوہر سمر وارڈن نے اس پر اپنے اکائونٹس کھولنے کا الزام لگایا ہے، اس کا کہنا ہے خلا باز کی اس حرکت سے ان کے تمام اکائونٹس اور دستاویزات غیر محفوظ ہو گئی ہیں۔ اس کا تمام ڈیٹا کمپیوٹر پر موجود ہے اور خلاباز کمپیوٹر کی مدد سے اس کی ہر دستاویز چیک کر سکتی ہے، لہٰذا اس نے اینی مکلین کے خلاف سخت کارروائی کرنے کی استدعا کی ہے۔ اس نے یہ دل چسپ الزام بھی لگایا کہ اس کی سابق بیوی نے آسمان میں جا کر بھی پیچھا نہیںچھوڑا اور ناسا کی ٹیکنالوجی کی مدد سے اس کی دستاویزات میں مداخلت کرتی رہی ہے۔ اینی مکلین نے یہ سمجھ لیا تھا کہ ناسا کا سسٹم بینکاری نظام کو بھی مفلوج اور غیر مؤثر بنا دے گا۔ اس کے خیال میں یہ نظام زمینی نظام سے باہر رہ کر کام کرے گا اور وہ چونکہ خلا میں ہے لہٰذا کسی کو بھنک نہیں پڑے گی کہ وہ کیا کر رہی۔ شاید وہ یہ بھی بھول گئی کہ اس کی ہر حرکت بینک کے نظام کے علاوہ ناسا کے سسٹم میں بھی ریکارڈ ہو جائے گی اور یہ جرم عیاں ہوجائے گا۔ بظاہر یہ فلمی سا سین لگتا ہے مگر ہے سچ۔ سمر وارڈن نے خلا باز پر اپنی شخصیت چھپانے کا بھی الزام عائد کیا ہے، اس نے وفاقی ٹریڈ کمیشن کے روبرو دائر کردہ درخواست میں الزام لگایا ہے کہ خلاباز نے نوکری کرنے کے لئے اپنی شادی چھپائی۔ اس کے علاوہ بھی کئی باتوں کو ناسا سے چھپائے رکھا، جنہیں ناسا کے لئے جاننا نہایت ضروری تھا۔ یہ باتیں ناسا نے سوال نامے میں بھی پوچھی تھیں مگر خلاباز اینی مکلین انہیں گول کر گئی۔ اگر وہ یہ باتیں ناسا کے علم میں لاتی تو ناسا اسے کبھی بھرتی نہ کرتا۔ اسی قسم کی ایک اور درخواست اس کے خاندان کی جانب سے بھی ناسا کے انسپکٹر جنرل آفس کو بھیجی گئی ہے۔ ان دونوں درخواستوں میں الگ الگ الزامات لگائے گئے ہیں۔ نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق ناسا اس معاملے کی تہہ تک پہنچنے کی کوشش کر رہی ہے۔ جب اینی سے پوچھا گیا کہ کیا اس نے اکائونٹس تک پہنچنے کی کوشش کی تھی، تو اس نے مان لیا ۔اس نے کہا ہاں، میں نے ایسا کیا تھا مگر اس میں کیا برائی ہے؟ وہ میرا شوہر رہا، مجھے اس کے اکائونٹس تک رسائی حاصل کرنے کا حق ہے۔ یہ حق میرے پاس ماضی میں بھی تھا، اگر میں نے اب چیک کر لیا تو کیا ہوا؟ اس نے کہا کہ وہ پہلے بھی ایک دوسرے کے اکائونٹس چیک کرتے رہے ہیں۔ وہ کہنے لگی ’’وارڈن کے پاس میرے بچے ہیں۔ میںخلا میں رہ کر دنیا سے لاعلم تھی۔ مجھے نہیں پتہ تھا کہ میرے بچوں کے لئے وارڈن کے اکائونٹس میں ڈالر ہیں بھی یا نہیں۔ مجھے ڈر تھا کہ کہیں میرے بچوں کا سکول سے نام نہ کٹ جائے۔ وارڈن کے اکائونٹس میں اتنے پیسے ہیں کہ اس مہینے میں بچوں کے اخراجات پورے ہو جائیں گے یا نہیں۔ جب یہ معلوم ہو گیا کہ پیسے پورے ہیں اور بچے اطمینان سے تعلیم حاصل کر سکتے ہیں تو میں نے اکاؤنٹ بند کر دیا، بس یہی چیک کرنے کی کوشش کی تھی‘‘ ۔ اس نے کہا کہ بچے میرے بھی ہیں اور ان کے بارے میں فکر کرنا میرا بھی فرض ہے، میں نے بطور ممتا کے ایسا کیا ہے اور ماں کو اپنے بچوں کی فکر ہونی چاہیے، اسے اس محبت اور پروا کرنے پر مورد الزام ٹھہرانے کی بجائے ممتا کے جذبات کا تحفظ کرنا چاہیے۔ ناسا کا انسپکٹر جنرل معاملے کی جانچ کر رہا ہے ۔ مکلین کے خلاف یہ شکایت اس کے کیریئر کو کھا گئی ہے، ناسا کے مطابق اس الزام کے ساتھ وہ خلا میں چہل قدمی نہیں کر سکے گی اور پھر خلائی سوٹ بنتا بھی بہت مہنگا ہے، اگرچہ بہت سی خواتین کو ایک سے بڑھ کر ایک مہنگا سوٹ پہننے کی عادت ہوتی ہے۔ بہرحال سوٹ بھی اسے واپس کرنا پڑے گا، اس کا خلائی مستقبل تاریک لگنے لگا ہے۔اس کی جگہ دوسری خلا باز اب کرسٹنا کوچ کے ساتھ خلا میں چہل قدمی کا فریضہ سرانجام دے گی۔ اگرچہ ناسا نے اس کی تردید کی ہے اور کہا ہے کہ اس تبدیلی کا وارڈن کے الزام سے کوئی تعلق نہیںہے مگر حالات و واقعات اس تبدیلی کے سبب کا واضح اشارہ دے رہے ہیں۔

 
  • Like
Reactions: maria_1

Elephent

Senior Member
Apr 19, 2019
909
345
63
خلا میں پہلی واردات
View attachment 115592
دنیا میں رہنے والے خلا کے بارے میں کم ہی جانتے ہیں کہ وہاں بھی جرائم کی نئی دنیا آباد ہو رہی ہے۔ ایک ماہر اور بہترین خاتون خلا باز کے خلاف ناسا نے خلا میں رہ کر اپنے سابق شوہر کے اکائونٹس چیک کرنے کے جرم میں کارروائی کا آغازکر دیا ہے۔ خاتون خلا باز پر الزام ہے کہ اس نے خلائی مشن کے دوران ناسا کی ٹیکنالوجی استعمال کرتے ہوئے اپنے سابق شوہر کے اکائونٹس کی پڑتال کی۔ غالباً اس کا خیال تھا کہ خلا میں رہ کر اس پر کوئی قانون نافذ نہیں ہو سکتا مگر ناسا اور دوسرے قانونی ماہرین نے کہہ دیا ہے کہ خلا میںجرم کرنے پر بھی وہی قانون نافذ ہوں گے جو زمین پر ہوتے ہیں۔ لہٰذا قانون سے لاعلمی اب معافی کا سبب بن ہی نہیں سکتی۔ امریکی خلا باز اینی مکلین کا شمار دنیا کے مایہ ناز خلا بازوں میں ہوتا ہے، وہ ناسا کی بہترین خلا بازوں میں شمار ہوتی ہے۔ اسی لئے اسے خلا میںچھ ماہ کے مشن پر بھیجا گیا تھا ۔اس مشن میں خلا میں چہل قدمی کرنا بھی شامل تھا۔ مگر اس کے سابق شوہر سمر وارڈن نے اس پر اپنے اکائونٹس کھولنے کا الزام لگایا ہے، اس کا کہنا ہے خلا باز کی اس حرکت سے ان کے تمام اکائونٹس اور دستاویزات غیر محفوظ ہو گئی ہیں۔ اس کا تمام ڈیٹا کمپیوٹر پر موجود ہے اور خلاباز کمپیوٹر کی مدد سے اس کی ہر دستاویز چیک کر سکتی ہے، لہٰذا اس نے اینی مکلین کے خلاف سخت کارروائی کرنے کی استدعا کی ہے۔ اس نے یہ دل چسپ الزام بھی لگایا کہ اس کی سابق بیوی نے آسمان میں جا کر بھی پیچھا نہیںچھوڑا اور ناسا کی ٹیکنالوجی کی مدد سے اس کی دستاویزات میں مداخلت کرتی رہی ہے۔ اینی مکلین نے یہ سمجھ لیا تھا کہ ناسا کا سسٹم بینکاری نظام کو بھی مفلوج اور غیر مؤثر بنا دے گا۔ اس کے خیال میں یہ نظام زمینی نظام سے باہر رہ کر کام کرے گا اور وہ چونکہ خلا میں ہے لہٰذا کسی کو بھنک نہیں پڑے گی کہ وہ کیا کر رہی۔ شاید وہ یہ بھی بھول گئی کہ اس کی ہر حرکت بینک کے نظام کے علاوہ ناسا کے سسٹم میں بھی ریکارڈ ہو جائے گی اور یہ جرم عیاں ہوجائے گا۔ بظاہر یہ فلمی سا سین لگتا ہے مگر ہے سچ۔ سمر وارڈن نے خلا باز پر اپنی شخصیت چھپانے کا بھی الزام عائد کیا ہے، اس نے وفاقی ٹریڈ کمیشن کے روبرو دائر کردہ درخواست میں الزام لگایا ہے کہ خلاباز نے نوکری کرنے کے لئے اپنی شادی چھپائی۔ اس کے علاوہ بھی کئی باتوں کو ناسا سے چھپائے رکھا، جنہیں ناسا کے لئے جاننا نہایت ضروری تھا۔ یہ باتیں ناسا نے سوال نامے میں بھی پوچھی تھیں مگر خلاباز اینی مکلین انہیں گول کر گئی۔ اگر وہ یہ باتیں ناسا کے علم میں لاتی تو ناسا اسے کبھی بھرتی نہ کرتا۔ اسی قسم کی ایک اور درخواست اس کے خاندان کی جانب سے بھی ناسا کے انسپکٹر جنرل آفس کو بھیجی گئی ہے۔ ان دونوں درخواستوں میں الگ الگ الزامات لگائے گئے ہیں۔ نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق ناسا اس معاملے کی تہہ تک پہنچنے کی کوشش کر رہی ہے۔ جب اینی سے پوچھا گیا کہ کیا اس نے اکائونٹس تک پہنچنے کی کوشش کی تھی، تو اس نے مان لیا ۔اس نے کہا ہاں، میں نے ایسا کیا تھا مگر اس میں کیا برائی ہے؟ وہ میرا شوہر رہا، مجھے اس کے اکائونٹس تک رسائی حاصل کرنے کا حق ہے۔ یہ حق میرے پاس ماضی میں بھی تھا، اگر میں نے اب چیک کر لیا تو کیا ہوا؟ اس نے کہا کہ وہ پہلے بھی ایک دوسرے کے اکائونٹس چیک کرتے رہے ہیں۔ وہ کہنے لگی ’’وارڈن کے پاس میرے بچے ہیں۔ میںخلا میں رہ کر دنیا سے لاعلم تھی۔ مجھے نہیں پتہ تھا کہ میرے بچوں کے لئے وارڈن کے اکائونٹس میں ڈالر ہیں بھی یا نہیں۔ مجھے ڈر تھا کہ کہیں میرے بچوں کا سکول سے نام نہ کٹ جائے۔ وارڈن کے اکائونٹس میں اتنے پیسے ہیں کہ اس مہینے میں بچوں کے اخراجات پورے ہو جائیں گے یا نہیں۔ جب یہ معلوم ہو گیا کہ پیسے پورے ہیں اور بچے اطمینان سے تعلیم حاصل کر سکتے ہیں تو میں نے اکاؤنٹ بند کر دیا، بس یہی چیک کرنے کی کوشش کی تھی‘‘ ۔ اس نے کہا کہ بچے میرے بھی ہیں اور ان کے بارے میں فکر کرنا میرا بھی فرض ہے، میں نے بطور ممتا کے ایسا کیا ہے اور ماں کو اپنے بچوں کی فکر ہونی چاہیے، اسے اس محبت اور پروا کرنے پر مورد الزام ٹھہرانے کی بجائے ممتا کے جذبات کا تحفظ کرنا چاہیے۔ ناسا کا انسپکٹر جنرل معاملے کی جانچ کر رہا ہے ۔ مکلین کے خلاف یہ شکایت اس کے کیریئر کو کھا گئی ہے، ناسا کے مطابق اس الزام کے ساتھ وہ خلا میں چہل قدمی نہیں کر سکے گی اور پھر خلائی سوٹ بنتا بھی بہت مہنگا ہے، اگرچہ بہت سی خواتین کو ایک سے بڑھ کر ایک مہنگا سوٹ پہننے کی عادت ہوتی ہے۔ بہرحال سوٹ بھی اسے واپس کرنا پڑے گا، اس کا خلائی مستقبل تاریک لگنے لگا ہے۔اس کی جگہ دوسری خلا باز اب کرسٹنا کوچ کے ساتھ خلا میں چہل قدمی کا فریضہ سرانجام دے گی۔ اگرچہ ناسا نے اس کی تردید کی ہے اور کہا ہے کہ اس تبدیلی کا وارڈن کے الزام سے کوئی تعلق نہیںہے مگر حالات و واقعات اس تبدیلی کے سبب کا واضح اشارہ دے رہے ہیں۔


(donttalktome)
 
  • Like
Reactions: intelligent086
Top
Forgot your password?