سوپر ساپر کیا ہے ۔۔؟

intelligent086

Super Star
Nov 10, 2010
5,671
5,716
1,313
Lahore,Pakistan
سوپر ساپر کیا ہے ۔۔؟
اس کی ایجاد کا سہرا آسٹریلیا کے شہری گورڈن ودنال کے سر جاتا ہے

بارش سے کئی کرکٹ میچز متاثر ہوتے ہیں ، گرائونڈ گیلی ہوجاتی ہے ، نہ صرف کرکٹ بلکہ فٹبال، ٹینس کورٹ ، گالف کورس اور دیگر آئوٹ ڈور کھیلوں کے کورٹس میں پانی کھڑا ہوجاتا ہے ۔ یہ پانی تھوڑی دیر میں ختم کردیا جاتا ہے جس مشین سے یہ کارنامہ سرانجام دیا جاتا ہے وہ کئی عشرے پہلے آسٹریلیا میں تیار ہوئی۔سوپر ساپر بارش کے پانی کو جذب کرنے والی جدید مشین کا نام ہے ۔ یہ مشین کرکٹ گرائونڈ کے علاوہ ٹینس کورٹ ،گالف کورس ، فٹبال گرائونڈز، پولو گرائونڈ،بیس بال گرائونڈ اور گھر کے لان سے پانی کو صاف کرنے کیلئے استعمال ہوتی ہے ۔

سوپر ساپر مشین کی کئی اقسام ہیں جن میں نیو وہیل، نیو شارک، سینڈپائپر، مینو، بے بی پینگوئن، پینگوئن اور والرس شامل ہیں ۔ اس میں سب سے چھوٹی مینو گھرکے لان اور بڑی کرکٹ گرائونڈ زکیلئے نیو وہیل استعمال ہوتی ہے ۔اس مشین کے استعمال کی ضرورت اس وقت شدت سے محسوس ہوئی جب بارش کی وجہ سے میچز ملتوی ہونے لگے ۔ اس کی ایجاد کا سہرا آسٹریلیا کے شہری گورڈن ودنال کے سر جاتا ہے جنہوں نے انتھک محنت کے بعد ایک ایسی رولر مشین تیار کی جو پانی کو جذب کرکے ٹینک میں ڈال دیتی تھی ۔



اس مشین کی تیاری کچھ اس طرح ہے کہ اس کا مرکزی حصہ ایک رولر کی طرح ہے جس کے گرد فوم لپٹا ہوتا ہے جو پانی کو جذب کرتا ہے اور اسپنج پانی کو جذب کرکے اندر لوہے کے ٹینک میں ڈال دیتا ہے ۔ فوم کی مقدار جتنی زیادہ ہوگی وہ اتنی ہی گیلی سطح سے پانی جذب کرکے پانی کو واٹر ٹینک میں ڈالے گا اور اس طرح پانی کو باہر نکال دیا جائے گا۔ کرکٹ گرائونڈز میں استعمال ہونے والی ’’نیو وہیل‘‘ کئی کئی لیٹر پانی جذب کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے ۔ کچھ ہاتھ سے چلائی جاسکتی ہیں جبکہ کچھ کو انجن کی مدد سے بھی چلایا جاتا ہے ۔ سوپر ساپر کو بنانے والی کمپنی1974 میں قائم ہوئی ۔ پہلی سوپر ساپر وہیل مشین1979 کو میلبورن کرکٹ گرائونڈ کے حوالے کی گئی۔ اس کے بعد یہ رچمنڈ فٹبال کلب کیلئے بھی استعمال کی گئی۔ انڈین کرکٹ بورڈ بی سی سی آئی نے آئی پی ایل کے لئے51 وہیل سوپر ساپر خریدیں۔نیو شارک سوپر ساپر ٹینس کورٹس کیلئے بہتر رہتی ہے ۔ دنیا میں سب سے زیادہ استعمال ہونیوالی سوپر ساپر سینڈ پائپر ہے ۔ یہ 1974سے اب تک16 ہزارسے زیادہ تعداد میں فروخت ہوچکی ہے ۔ یہ کرکٹ کلبوں ، فٹبال کلبوں ،سنتھیٹک کورٹس ، نیٹ بال کورٹس کیلئے بہتر رہتی ہے ۔ اس کے واٹر ٹینک کے پانی جمع کرنے کی صلاحیت 48لیٹر ہے ۔

اصل میں سوپر ساپر کی ابتدا بھی بڑے دلچسپ انداز میں ہوئی ۔ یہ 1974 کی بات ہے ۔سڈنی کی لیور پول گالف کورس کا میدان تھا جہاں پانی کے چھوٹے سے جمع ہوئے حصہ میں ایک شخص کی گیند آکر گری تو اس نے گورڈن ودنال کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ’’تم ایک موجد ہو ۔۔تم کیوں نہیں ایک ایسی مشین ایجاد کرتے جو جمع ہونے والے پانی کو صاف کردے ‘‘۔۔۔یہ بات گورڈن کے دماغ کو ٹکرائی۔۔وہ ایک ماہر موجد تھا ۔۔اپنی لیبارٹری میں آیا اور کام میں مگن ہوگیا تین دن بعد جب وہ لیبارٹر ی سے نکلا تو اس کے ہاتھ میں موجودہ سینڈپائپر شکل والی سوپر ساپر تھی ۔اس زمانے میں اے بی سی ٹی وی پر’’ دی انوینٹرز‘‘کے نام سے پروگرام چلتا تھا ۔ گورڈن ودنال یہ مشین وہاں لے آیا ۔ اس رات سوپر ساپر نے سب سے زیادہ ووٹ لے کر رات کی بہترین ایجاد کا اعزاز اپنے نام کرلیا۔ اس پروگرام سے ملنے والی شہرت کے بعد گورڈن فیملی نے ہر سال پچاس سوپر ساپر سکولوں ، کونسلز، کرکٹ کلبوں اور ٹینس کورٹس کو فروخت کرنا شروع کردیں۔1979میں ایک رات گورڈن ودنال کو میلبورن کرکٹ گرائونڈ کے منیجر کی کال آئی کہ انہیں پور ے میلبورن کرکٹ گرائونڈ کو خشک کرنے کیلئے بڑی مشین درکار ہے کیا تم وہ مشین بنا کر دے سکتے ہو۔ گورڈن ودنال نے اس منصوبے پر کام شروع کیا اور بالاآخر وہیل سوپرساپر مشین تیار کرکے میلبورن کرکٹ گرائونڈ کو دی ۔ اس کے بعد سوپر ساپر کی شہرت دنیا بھر میں پھیل گئی اور گورڈن ودنال سے انگلینڈ ، جاپان کی کمپنیوں نے معاہدے کئے ۔ بزرگی کے باعث گورڈن ودنال1995 میں ریٹائر ہوگئے اور اپنی کمپنی فروخت کردی ۔


 
  • Like
Reactions: maria_1
Top
Forgot your password?