شب جا چکی فلک پہ ستارے نہیں رہے

ROHAAN

LOVE IS LIFE
TM Star
Aug 14, 2016
2,635
1,966
513
115636


شب جا چکی فلک پہ ستارے نہیں رہے

ایسا نہیں کہ تم ہی ہمارے نہیں رہے
ہم لوگ بھی حضور تمہارے نہیں رہے

تنہا کیے عبور سبھی فاصلوں کے دشت
زندہ کبھی کسی کے سہارے نہیں رہے

لڑنا پڑا ہمیں بھی ہر اِک موج سے وہاں
جب اپنی دسترس میں کنارے نہیں رہے

اچھے دِنوں میں ساتھ تھے جو سائے کی طرح
مشکل میں ساتھ وہ بھی ہمارے نہیں رہے

بس اَب تو اُس کی یاد کی قندیل گُل کرو
شب جا چکی فلک پہ ستارے نہیں رہے

جانِ صفیؔ کریدتے ہو راکھ کس لیے
دِل بجھ چکا ہے اَب وہ شرارے نہیں رہے
 
Top
Forgot your password?