طالبان کیساتھ معاہدے کے باوجود امریکی فوجی افغانستان میں ہی رہیں گے، ٹرمپ کا اعلان

intelligent086

Super Star
Nov 10, 2010
5,671
5,716
1,313
Lahore,Pakistan
طالبان کیساتھ معاہدے کے باوجود امریکی فوجی افغانستان میں ہی رہیں گے، ٹرمپ کا اعلان
115617

واشنگٹن: (دنیا نیوز) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اعلان کیا ہے کہ فوجی دستے طالبان کے ساتھ معاہدے کے باوجود افغانستان میں ہی رہیں گے۔ انہوں نے واضح کیا کہ اگر دوبارہ افغان سرزمین امریکا کے خلاف استعمال ہوئی تو وہ واپس آئیں گے۔


تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے میڈیا کو دیے گئے ایک انٹرویو میں واضح کر دیا ہے کہ طالبان کے ساتھ معاہدے کے باوجود امریکی فوج افغانستان میں ہی رہے گی۔


امریکی صدر کہتے ہیں کہ طالبان سے معاہدے کے بعد تھوڑی تعداد میں فوجی دستے مستقل طور پر موجود رہیں گے۔ ٹرمپ نے افغانستان میں فوج کی تعداد میں کمی کا اعلان تو کیا ہی ہے، مگر ساتھ میں یہ بھی اعلان کیا ہے کہ اگر افغانستان کی سرزمین دوبارہ امریکا کے خلاف استعمال ہوئی تو وہ واپس آئیں گے۔


یاد رہے کہ خیال رہے کہ 2001ء میں کو امریکا میں نیویارک ٹاورز پر ہونے والے حملے کے بعد امریکی فوج کی بڑی تعداد کو افغانستان بھیجا گیا تھا۔ امریکا اب اس 18 سالہ طویل جنگ کا خاتمہ چاہتا ہے، اسی سلسلے میں وہ کافی عرصے سے افغان طالبان کے ساتھ مذاکرات میں مصروف ہے۔


برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق امریکی فوج نے اب تک افغانستان میں اربوں ڈالر خرچ کر ڈالے ہیں۔ اعدادوشمار کے مطابق 2011ء سے 2012ء کے درمیان افغانستان کی سرزمین پر امریکا کے ایک لاکھ سے زائد ہ فوجی موجود تھے اور اس کا سالانہ خرچ 100 ارب ڈالر تک جا پہنچا تھا۔

 
  • Like
Reactions: maria_1
Top
Forgot your password?