نماز جنازہ

Asheer

ஜÇatch-me'ıf U-caŋஜ
Super Star
Feb 10, 2013
12,983
6,200
1,113
Karachi
السلام علیکم
تمام مذاہب اور دنیا کے تمام باشعور انسان جس طرح ایک انسان کے عدم سے وجود میں آنے پر خوشی کے اظہار اور محبتوں کے ساتھ خوش آمدید کہتے ہیں۔ اسی طرح دنیا سے جانے پر بھی اسے محبتوں اور دعاؤں کے ساتھ رخصت کرتے ہیں۔

اسلام چونکہ آفاقی مذہب ہے۔ ہر لحاظ سے کامل و اکمل دین ہے جو جہاں زندگی بہترین طریقے سے جینے کا درس دیتا ہے وہیں وہ مرنے کے بعد ابن آدم کو اکرام کے ساتھ رخصت کرنے کا مکمل طریقہ بھی بتاتا ہے۔

اس دار فانی سے کوچ کرنے کے بعد دو چیزیں جن کا اہتمام کیا جاتا ہے قابل ذکر ہیں۔ اول کفن دفن کا اہتمام، ثانی نماز جنازہ ۔

اول ذکر ابن آدم کا آخری مقام ہے جس میں اکرام کا پہلو بہت واضح ہے۔ ثانی الذکر نماز جنازہ، چونکہ الحمداللہ ہم مسلمان عقیدہ معاد (عقیدہ آخرت) پر کامل یقین رکھتے ہیں لہذا وہاں انسان کو دعاوں ہی کی ضرورت ہوتی ہے اور یہ اپنے پیاروں کے لئے آخری تحفہ ہوتا ہے۔

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صل اللہ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا: "جس شخص نے جنازے میں شریک ہو کر نماز جنازہ پڑھی اسے ایک قیراط ثواب ملتا ہے اور جو میت کی تدفین تک وہاں موجود رہا اسے دو قیراط ثواب ملتا ہے۔"
پوچھا گیا: یا رسول اللہ صل اللہ علیہ والہ وسلم دو قیراط کتنے ہوتے ہیں؟
آپ صل اللہ علیہ والہ وسلم نے فرمایا: دو بڑے بڑے پہاڑوں کے برابر۔
(صحیح بخاری : 1325)

نماز جنازہ کا طریقہ حدیث کی روشنی میں

جنازے کی نماز چار تکبیر سے ادا کی جاتی ہے

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے نجاشی کا جس دن انتقال ہوا اسی دن رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ان کی وفات کی خبر دی اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم صحابہ کے ساتھ عیدگاہ گئے۔ پھر آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے صف بندی کرائی اور چار تکبیریں کہیں۔

صحیح بخاری جلد ۲ ۱۳۳۳

پہلی تکبیر کے بعد سورۃ فاتحہ پڑھنی چاہیے

حضرت امامہ رضی اللہ عنہ نے فرمایا نمازِ جنازہ میں پہلی تکبیر کے بعد سورۃ فاتحہ آہستہ سے پڑھنا چاہیے
سنن نسائی جلد ۱ ۱۹۹۳

پھر دوسری تکبیر کہی جائے اور درود ابرہیم پڑھنا چاہیے

پھر تیسری تکبیر کہی جائے اور یہ دعا پڑھنی چاہیے

نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کو میت پر نماز جنازہ میں کہتے سنا:
«اللہم اغفر لحينا وميتنا وشاهدنا وغائبنا وذكرنا وأنثانا وصغيرنا وكبيرنا»

”اے اللہ! ہمارے زندہ اور مردہ کو، ہمارے حاضر اور غائب، ہمارے نر اور مادہ، ہمارے چھوٹے اور بڑے سب کو بخش دے“۔
سنن نسائی جلد ۱ ۱۹۹۰

پھر چوتھی تکبیر کہی جائے اور ایک طرف سلام پھیر دیا جائے
 

Seemab_khan

ღ ƮɨƮŁɨɨɨ ღ
Moderator
Dec 7, 2012
7,597
5,429
1,113
✮hმΓἶρυΓ, ρმκἶჰནმῆ✮
السلام علیکم
تمام مذاہب اور دنیا کے تمام باشعور انسان جس طرح ایک انسان کے عدم سے وجود میں آنے پر خوشی کے اظہار اور محبتوں کے ساتھ خوش آمدید کہتے ہیں۔ اسی طرح دنیا سے جانے پر بھی اسے محبتوں اور دعاؤں کے ساتھ رخصت کرتے ہیں۔

اسلام چونکہ آفاقی مذہب ہے۔ ہر لحاظ سے کامل و اکمل دین ہے جو جہاں زندگی بہترین طریقے سے جینے کا درس دیتا ہے وہیں وہ مرنے کے بعد ابن آدم کو اکرام کے ساتھ رخصت کرنے کا مکمل طریقہ بھی بتاتا ہے۔

اس دار فانی سے کوچ کرنے کے بعد دو چیزیں جن کا اہتمام کیا جاتا ہے قابل ذکر ہیں۔ اول کفن دفن کا اہتمام، ثانی نماز جنازہ ۔

اول ذکر ابن آدم کا آخری مقام ہے جس میں اکرام کا پہلو بہت واضح ہے۔ ثانی الذکر نماز جنازہ، چونکہ الحمداللہ ہم مسلمان عقیدہ معاد (عقیدہ آخرت) پر کامل یقین رکھتے ہیں لہذا وہاں انسان کو دعاوں ہی کی ضرورت ہوتی ہے اور یہ اپنے پیاروں کے لئے آخری تحفہ ہوتا ہے۔

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صل اللہ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا: "جس شخص نے جنازے میں شریک ہو کر نماز جنازہ پڑھی اسے ایک قیراط ثواب ملتا ہے اور جو میت کی تدفین تک وہاں موجود رہا اسے دو قیراط ثواب ملتا ہے۔"
پوچھا گیا: یا رسول اللہ صل اللہ علیہ والہ وسلم دو قیراط کتنے ہوتے ہیں؟
آپ صل اللہ علیہ والہ وسلم نے فرمایا: دو بڑے بڑے پہاڑوں کے برابر۔
(صحیح بخاری : 1325)

نماز جنازہ کا طریقہ حدیث کی روشنی میں

جنازے کی نماز چار تکبیر سے ادا کی جاتی ہے

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے نجاشی کا جس دن انتقال ہوا اسی دن رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ان کی وفات کی خبر دی اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم صحابہ کے ساتھ عیدگاہ گئے۔ پھر آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے صف بندی کرائی اور چار تکبیریں کہیں۔

صحیح بخاری جلد ۲ ۱۳۳۳

پہلی تکبیر کے بعد سورۃ فاتحہ پڑھنی چاہیے

حضرت امامہ رضی اللہ عنہ نے فرمایا نمازِ جنازہ میں پہلی تکبیر کے بعد سورۃ فاتحہ آہستہ سے پڑھنا چاہیے
سنن نسائی جلد ۱ ۱۹۹۳

پھر دوسری تکبیر کہی جائے اور درود ابرہیم پڑھنا چاہیے

پھر تیسری تکبیر کہی جائے اور یہ دعا پڑھنی چاہیے

نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کو میت پر نماز جنازہ میں کہتے سنا:
«اللہم اغفر لحينا وميتنا وشاهدنا وغائبنا وذكرنا وأنثانا وصغيرنا وكبيرنا»

”اے اللہ! ہمارے زندہ اور مردہ کو، ہمارے حاضر اور غائب، ہمارے نر اور مادہ، ہمارے چھوٹے اور بڑے سب کو بخش دے“۔
سنن نسائی جلد ۱ ۱۹۹۰


پھر چوتھی تکبیر کہی جائے اور ایک طرف سلام پھیر دیا جائے
Walaikum assalaam..
Jazakallahu khyr....

Informative . . . . Allah achy tareqy syy km waqt me behtareen maloomaat pohnchany ka ajar dyy apko aameen...
 
  • Like
Reactions: Asheer

saviou

Manager
Aug 23, 2009
41,204
24,143
1,313
السلام علیکم
تمام مذاہب اور دنیا کے تمام باشعور انسان جس طرح ایک انسان کے عدم سے وجود میں آنے پر خوشی کے اظہار اور محبتوں کے ساتھ خوش آمدید کہتے ہیں۔ اسی طرح دنیا سے جانے پر بھی اسے محبتوں اور دعاؤں کے ساتھ رخصت کرتے ہیں۔

اسلام چونکہ آفاقی مذہب ہے۔ ہر لحاظ سے کامل و اکمل دین ہے جو جہاں زندگی بہترین طریقے سے جینے کا درس دیتا ہے وہیں وہ مرنے کے بعد ابن آدم کو اکرام کے ساتھ رخصت کرنے کا مکمل طریقہ بھی بتاتا ہے۔

اس دار فانی سے کوچ کرنے کے بعد دو چیزیں جن کا اہتمام کیا جاتا ہے قابل ذکر ہیں۔ اول کفن دفن کا اہتمام، ثانی نماز جنازہ ۔

اول ذکر ابن آدم کا آخری مقام ہے جس میں اکرام کا پہلو بہت واضح ہے۔ ثانی الذکر نماز جنازہ، چونکہ الحمداللہ ہم مسلمان عقیدہ معاد (عقیدہ آخرت) پر کامل یقین رکھتے ہیں لہذا وہاں انسان کو دعاوں ہی کی ضرورت ہوتی ہے اور یہ اپنے پیاروں کے لئے آخری تحفہ ہوتا ہے۔

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صل اللہ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا: "جس شخص نے جنازے میں شریک ہو کر نماز جنازہ پڑھی اسے ایک قیراط ثواب ملتا ہے اور جو میت کی تدفین تک وہاں موجود رہا اسے دو قیراط ثواب ملتا ہے۔"
پوچھا گیا: یا رسول اللہ صل اللہ علیہ والہ وسلم دو قیراط کتنے ہوتے ہیں؟
آپ صل اللہ علیہ والہ وسلم نے فرمایا: دو بڑے بڑے پہاڑوں کے برابر۔
(صحیح بخاری : 1325)

نماز جنازہ کا طریقہ حدیث کی روشنی میں

جنازے کی نماز چار تکبیر سے ادا کی جاتی ہے

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے نجاشی کا جس دن انتقال ہوا اسی دن رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ان کی وفات کی خبر دی اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم صحابہ کے ساتھ عیدگاہ گئے۔ پھر آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے صف بندی کرائی اور چار تکبیریں کہیں۔

صحیح بخاری جلد ۲ ۱۳۳۳

پہلی تکبیر کے بعد سورۃ فاتحہ پڑھنی چاہیے

حضرت امامہ رضی اللہ عنہ نے فرمایا نمازِ جنازہ میں پہلی تکبیر کے بعد سورۃ فاتحہ آہستہ سے پڑھنا چاہیے
سنن نسائی جلد ۱ ۱۹۹۳

پھر دوسری تکبیر کہی جائے اور درود ابرہیم پڑھنا چاہیے

پھر تیسری تکبیر کہی جائے اور یہ دعا پڑھنی چاہیے

نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کو میت پر نماز جنازہ میں کہتے سنا:
«اللہم اغفر لحينا وميتنا وشاهدنا وغائبنا وذكرنا وأنثانا وصغيرنا وكبيرنا»

”اے اللہ! ہمارے زندہ اور مردہ کو، ہمارے حاضر اور غائب، ہمارے نر اور مادہ، ہمارے چھوٹے اور بڑے سب کو بخش دے“۔
سنن نسائی جلد ۱ ۱۹۹۰


پھر چوتھی تکبیر کہی جائے اور ایک طرف سلام پھیر دیا جائے

Wa Alaykum Assalam
Jazak Allah Khairan

waqai islam kaamil aur paakiza mazhab hai jisme har tareeqa wazeh taur par bataya gaya hai balke Allah k nabi alayhi salam ne practical hame karke bataye hain bas zarurat amal ki hai

hamare paas to bas naarey lagtey hain lekin amal nahi hota
Allah amal ki taufeeq de Aameen


waise janaze ki namaz k liye aur bhi duayen sabit hain
mazeed tafseelat k liye is thread ka mutala kar sakte hain in sha Allah
 

Asheer

ஜÇatch-me'ıf U-caŋஜ
Super Star
Feb 10, 2013
12,983
6,200
1,113
Karachi
Wa Alaykum Assalam
Jazak Allah Khairan

waqai islam kaamil aur paakiza mazhab hai jisme har tareeqa wazeh taur par bataya gaya hai balke Allah k nabi alayhi salam ne practical hame karke bataye hain bas zarurat amal ki hai

hamare paas to bas naarey lagtey hain lekin amal nahi hota
Allah amal ki taufeeq de Aameen


waise janaze ki namaz k liye aur bhi duayen sabit hain
mazeed tafseelat k liye is thread ka mutala kar sakte hain in sha Allah
G aesa he hy ajkl zabani kalami musalman to boht milengy mgr ba-amal boht qaleel tadaad me
 
  • Like
Reactions: saviou

saviou

Manager
Aug 23, 2009
41,204
24,143
1,313
G aesa he hy ajkl zabani kalami musalman to boht milengy mgr ba-amal boht qaleel tadaad me
jee
waise ye social media wale musalman bhi bohot zyada hain facebook to deendaar aur asal zindagi me deen se door door tak koi lena nahi

Allah hamare halaat ko durust farmaye Aameen
 
  • Like
Reactions: Asheer

Asheer

ஜÇatch-me'ıf U-caŋஜ
Super Star
Feb 10, 2013
12,983
6,200
1,113
Karachi
jee
waise ye social media wale musalman bhi bohot zyada hain facebook to deendaar aur asal zindagi me deen se door door tak koi lena nahi

Allah hamare halaat ko durust farmaye Aameen
Social media to mere khayal me aik boht bara fitna hy... Allah rehem karen ameen
 
  • Like
Reactions: shehr-e-tanhayi
Top
Forgot your password?