کابل میں خودکش حملہ؛ فوجی اہلکاروں سمیت 28 افراد ہلاک اور300 سے زائد زخمی

iqbal jehangir

Regular Member
Mar 12, 2011
95
17
708
کابل میں خودکش حملہ؛ فوجی اہلکاروں سمیت 28 افراد ہلاک اور300 سے زائد زخمی

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں خفیہ ایجنسی کے دفتر کے قریب خودکش حملے کے نتیجے میں سیکیورٹی فوسز کے اہلکاروں سمیت 28 افراد ہلاک اور 300 سے زائد زخمی ہوگئے۔
غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق دارالحکومت کابل میں وزارت دفاع کی عمارت کے قریب کار میں سوار خودکش بمبار نے افغان خفیہ ادارے کے دفتر کے خود کو دھماکے سے اڑا لیا جس کے بعد خودکش بمبار کے ساتھیوں نے فائرنگ کرنا شروع کردی جس کے نتیجے میں 28 افراد موقع پر ہلاک اور 300 سے زائد زخمی ہوگئے۔ کابل پولیس چیف عبدالرحمان رحیمی کے مطابق انتہائی حساس علاقے میں تخریبی کارروائی کرنے والے تمام حملہ آوروں کو مارا جاچکا ہے جب کہ حملے میں 28 افراد ہلاک اور 327 زخمی ہوئے جب کہ حملے کی ذمہ داری طالبان نے قبول کرلی۔
دوسری جانب افغان صدر اشرف غنی نے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے اس میں ہونے والی ہلاکتوں کی تصدیق کی اور کہا کہ حملہ افغانستان کے دل میں کیا گیا جو کسی صورت قابل برداشت نہیں انہوں نے دھماکے میں زخمی ہونے والوں کو بہترین طبی سہولیات فراہم کرنے کی بھی ہدایت کی
http://www.express.pk/story/494114
مرنے والوں میں اکثریت عام شہریوں کی ہے۔ بم حملے سے قبل بعض مسلح افراد سرکاری عمارت میں داخل ہوئے جو ملک کے سپیشل پروکیشن یونٹ کے زیرِ استعمال تھی۔
http://www.bbc.com/urdu/regional/2016/04/160419_kabul_suicide_blast_zs

کابل حملہ میں مرنے والوں کی تعداد 64 ہو گئی۔

http://aaj.tv/2016/04/death-toll-from-blast-in-afghan-capital-kabul-rises-to-64/

خودکش حملے،دہشت گردی اور بم دھماکے اسلام میں جائز نہیں یہ اقدام کفر ہے اور قران و حدیث میں اس کی ممانعت ہے.بے گناہ اور معصوم لوگوں کے قتل کی اسلام میں ممانعت ہے۔اسلامی شریعہ کے مطابق اور بچوں عورتوں کو جنگ کا ایندہن نہ بنایا جا سکتا ہے۔ حدیث رسول کریم ہے کہ مسلمان وہ ہے جس کی زبان اور ہاتھوں سے دوسرے مسلمانوں کو گزند نہ پہنچے۔ اسلام امن اور سلامتی کا دین ہے اور دہشتگرد اسلا م اور امن کے دشمن ہیں۔ دہشتگرد تنظیمیں جہالت اور گمراہی کےر استہ پر ہیں۔جہاد کے نام پر بے گناہوں کا خون بہانے والے دہشتگرد ہیں۔یہ دہشتگرد اسلام کو بدنام اور امت مسلمہ کو کمزور کر رہے ہیں۔
 
Top
Forgot your password?