ہوا کے ہاتھوں کی مہربانی

ROHAAN

LOVE IS LIFE
TM Star
Aug 14, 2016
2,635
1,966
513
115291


ہوا کے ہاتھوں کی مہربانی

ہوا کے ہاتھوں کی مہربانی سے ڈر گئے ہیں
یہ پھول خوشبو کی رائیگانی سے ڈر گئے ہیں

ہمیں بھی رخصت کی رسم کچھ تو نباہنا تھی
تمہاری آنکھوں میں آئے پانی سے ڈر گئے ہیں

یہ تیر جتنے فضا میں آکر ٹھہر گئے ہیں
کسی پرندے کی بے زبانی سے ڈر گئے ہیں

ابھی تو دل کو اداس کرتی نہیں ہیں شامیں
ابھی سے کیوں غم کی حکمرانی سے ڈر گئے ہیں

ہمیں بھی ساحل پہ گیت لکھتا تھا سپیوں سے
مگر ہواؤں کی مہربانی سے ڈر گئے ہیں
 
Top
Forgot your password?