Aaj Ka Intikhaab............!!

Kavi

Super Star
Oct 30, 2015
10,922
1,947
513
اپنی الجھن کو بڑھانے کی ضرورت کیا ہے
چھوڑنا ہے تو بہانے کی ضرورت کیا ہے

لگ چکی آگ تو لازم ہے دھواں اٹھے گا
درد کو دل میں چھپانے کی ضرورت کیا ہے

عمر بھر رہنا ہے تعبیر سے گر دور تمہیں
پھر مرے خواب میں آنے کی ضرورت کیا ہے

اجنبی رنگ چھلکتا ہو اگر آنکھوں سے
ان سے پھر ہاتھ ملانے کی ضرورت کیا ہے

آج بیٹھے ہیں ترے پاس کئی دوست نئے
اب تجھے دوست پرانے کی ضرورت کیا ہے

ساتھ رہتے ہو مگر ساتھ نہیں رہتے ہو
ایسے رشتے کو نبھانے کی ضرورت کیا ہے
Lovely
 
  • Like
Reactions: Angela

ujalaa

TM Star
Feb 17, 2010
2,913
993
1,213
Meray Saath Saath Sada Rha wO Meri Nazar Sey ChUpa hUa
Yeh Ajeeb Sii jO MiSaal hAi Na Kabhi Mila Na jUda hUa
Jisey Ley Gaii hAi Abhi Hawa wO Waraq Tha Dil Ki Kitaab Ka
Kahien AansOoun Sey Likha hua kahi Aansoon se mitta hua...
 
  • Like
Reactions: maya22

Angela

~LONELINESS FOREVER~
TM Star
Apr 29, 2019
2,692
2,814
213
~Dasht e Tanhaayi~
اشک رواں کی نہر ہے اور ہم ہیں دوستو
اس بے وفا کا شہر ہے اور ہم ہیں دوستو

یہ اجنبی سی منزلیں اور رفتگاں کی یاد
تنہائیوں کا زہر ہے اور ہم ہیں دوستو

لائی ہے اب اڑا کے گئے موسموں کی باس
برکھا کی رت کا قہر ہے اور ہم ہیں دوستو

پھرتے ہیں مثل موج ہوا شہر شہر میں
آوارگی کی لہر ہے اور ہم ہیں دوستو

شام الم ڈھلی تو چلی درد کی ہوا
راتوں کی پچھلا پہر ہے اور ہم ہیں دوستو

آنکھوں میں اڑ رہی ہے لٹی محفلوں کی دھول
عبرت سرائے دہر ہے اور ہم ہیں دوستو
 
  • Like
Reactions: Spirit and ujalaa

Kavi

Super Star
Oct 30, 2015
10,922
1,947
513
خوشبو جیسے لوگ ملے افسانے میں
ایک پرانا خط کھولا انجانے میں
 
  • Like
Reactions: ujalaa

Angela

~LONELINESS FOREVER~
TM Star
Apr 29, 2019
2,692
2,814
213
~Dasht e Tanhaayi~
میں سچ کہوں پس دیوار جھوٹ بولتے ہیں
مرے خلاف مرے یار جھوٹ بولتے ہیں
ملی ہے جب سے انہیں بولنے کی آزادی
تمام شہر کے اخبار جھوٹ بولتے ہیں
میں مر چکا ہوں مجھے کیوں یقیں نہیں آتا
تو کیا یہ میرے عزا دار جھوٹ بولتے ہیں
یہ شہر عشق بہت جلد اجڑنے والا ہے
دکان دار و خریدار جھوٹ بولتے ہیں
بتا رہی ہے یہ تقریب منبر و محراب
کہ متقی و ریاکار جھوٹ بولتے ہیں
قدم قدم پہ نئی داستاں سناتے لوگ
قدم قدم پہ کئی بار جھوٹ بولتے ہیں
میں سوچتا ہوں کہ دم لیں تو میں انہیں ٹوکوں
مگر یہ لوگ لگاتار جھوٹ بولتے ہیں
ہمارے شہر میں عامیؔ منافقت ہے بہت
مکین کیا در و دیوار جھوٹ بولتے ہیں
 
  • Like
Reactions: Kavi and Spirit

Angela

~LONELINESS FOREVER~
TM Star
Apr 29, 2019
2,692
2,814
213
~Dasht e Tanhaayi~
یہ دن یہ رات یہ شام و سحر سمیٹ لئے
غزل کے شوق نے کتنے پہر سمیٹ لئے
فضا میں ایسا تعصب کا زہر پھیل گیا
نہ جانے کتنے پرندوں نے پر سمیٹ لئے
سماج تیری مرمت نہ ہو سکے گی کہیں
جو ہم غریبوں نے دست و ہنر سمیٹ لئے
یہ سوچ کر کہ اندھیرے نہ زندگی بن جائیں
جہاں جہاں ملے شمس و قمر سمیٹ لئے
بکھیر پائے نہ ہم راستوں میں پھول مگر
ملے جو خار سر رہ گزر سمیٹ لئے
پتا بتائے گا اب وقت ان کی منزل کا
مسافروں نے تو رکھتے سفر سمیٹ لئے
سمجھ میں آ گئی شاہدؔ اگر کوئی بھی ردیف
جو قافیہ بھی لگے معتبر سمیٹ لئے
 
  • Like
Reactions: Kavi and Spirit
Top
Forgot your password?