1. This site uses cookies. By continuing to use this site, you are agreeing to our use of cookies. Learn More.

یہ تو نے کیا کہا خونِ تمنا ہو نہیں سکتا

Discussion in 'Ghazal' started by Untamed-Heart, Jun 13, 2018.

  1. Untamed-Heart

    Untamed-Heart
    Expand Collapse
    ❤HEART❤
    UpComing Staff

    Joined:
    Sep 21, 2015
    Messages:
    23,026
    Likes Received:
    7,089
    یہ تو نے کیا کہا خونِ تمنا ہو نہیں سکتا
    تری مہندی تو سلامت ہے تو کیا کیا ہو نہیں سکتا
    پڑھے گر لاکھ ماہِ چرخ تم سا ہو نہیں سکتا
    یہ صورت ہو نہیں سکتی یہ نقشہ ہو نہیں سکتا
    کروں سجدے میں اے بت مجھ سے ایسا ہو نہیں سکتا
    خدا تو ہو نہیں سکتا میں بندہ ہو نہیں سکتا
    قفس سے چھوٹ کر صیاد جائیں تو کیا جائیں
    ہمیں تو آشیاں بھی اب مہیا ہو نہیں سکتا
    گناہ گاروں کا مجمع سب سے آگے ہو گا اے واعظ
    تجھے دیدار بھی پہلے خدا کا ہو نہیں سکتا
    نہ دینا آشیاں کو آگ ورنہ جان دے دیں گے
    ہمارے سامنے صیاد ایسا ہو نہیں سکتا
    انہیں پر منحصر کیا آزما بیٹھے زمانے کو
    قمر سچ تو یہ ہے کوئی کسی کا ہو نہیں سکتا
    قمر جلالوی

    photo34.jpg

    @Don @saviou @Shiraz-Khan @shehr-e-tanhayi @Hoorain @RedRose64
    @Aaylaaaaa @minaahil @Umm-e-ahmad @H@!der @khalid_khan
    @duaabatool @Armaghankhan @zaryaab-irtiza @DiLkash @seemab_khan
    @Cyra @Kavi @rooja @Aaidah @BeautyRose @Gaggan @hasandawar
    @Hasii @Masha @Bird-Of-Paradise @Besharam @shzd @hinakhan0
    @Belahadi @Manahi007 @BeautyRose @ujalaa @*Sonu* @Guriyaa_Ranee
    @sonu-unique @Zunaira-Aqeel @shahijutt @ujalaa @Layla
    @Shanzykhan @sweet bhoot @NXXXS @IceCream @zahra1234 @AnadiL @Basitkikhushi


     

Share This Page